کتاب النصائح میں مذکور ہے، کہ حضرت ابوالدرداء رضی اللہ عنہ کی ایک لونڈی تھی۔ اس لونڈی نے ایک دن حضرت ابوالدرداء رضی اللہ عنہ سے کہا کہ آپ کس جنس سے ہیں؟ حضرت ابوالدرداء رضی اللہ عنہ نے فرمایا، کہ میں تمہاری طرح ایک انسان ہوں۔ اس لونڈی نے کہا آپ کیسے آدمی ہیں کہ میں نے آپ کو چالیس دن تک زہر کھلایا، لیکن آپ کو کچھ بھی نقصان نہیں پہنچا۔ پس حضرت ابوالدرداء رضی اللہ عنہ نے فرمایا، کیا تو نہیں جانتی کہ اللہ کا ذکر کرنے والوں کو کوئی چیز بھی نقصان نہیں پہنچا سکتی۔ اور میں تو اسم عظم کے ساتھ اللہ تعالٰی کا ذکر کرتا ہوں۔
اس لونڈی نے کہا کہ وہ اسم اعظم کیا ہے؟ حضرت ابوالدرداء رضی اللہ عنہ نے فرمایا، کہ وہ یہ ہے، ،،بِسْمِ اللَّهِ الَّذِي لَا يَضُرُّ مَعَ اسْمِهِ شَيْءٌ فِي الْأَرْضِ وَلَا فِي السَّمَاءِ وَهُوَ السَّمِيعُ الْعَلِيْمُ،، پھراس کے بعد حضرت ابوالدرداء رضی اللہ عنہ نے کہا، کہ تو نے مجھے زہر کیوں کھلایا تھا؟ اس باندی نے کہا کہ آپ سے بغض رکھنے کی وجہ سے، حضرت ابوالدرداء رضی اللہ عنہ نے فرمایا، کہ تو لوجہ اللہ آزاد ہے اور تو نے جو بدسلوکی کا رویہ اختیار کیا تھا، وہ بھی میں نے معاف کردیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *