تین چیزیں اقوال

تین چیزوں کو قابو میں رکھیں:دل، غصہ، زبان۔

تین چیزوں کے لئے لڑیں:ملک، حق، عزت۔

تین چیزوں سے پرہیز کریں: جھوٹ، چوری، چغل۔

تین چیزیں حاصل کریں:علم، اخلاق، شرافت۔

تین چیزوں پر ایمان رکھیں:توحید، رسالت، قیامت۔

تین چیزوں کو یاد رکھیں:موت، احسان، نصیحت۔

تین چیزوں کو نہ ٹھکرائیں:خلوص، تحفہ، دعوت۔

تین چیزوں کو پاک رکھیں:خیالات، لباس، جسم۔

انسان کو ایک بار ملتی ہیں۔ والدین، حسن، جوانی۔

بھائی بھائی کو دشمن بنا دیتی ہے۔ زمین، زر، زن،

دولت پردہ چاہتی ہیں۔ کھانا، دولت، عورت۔

انسان کو ذلیل کرتی ہے۔ چوری، چغلی، جھوٹ۔

اصل مقصد سے روکتی ہیں۔ بد چلنی، غصہ، حرص۔

ہر ایک کو پیاری ہوتی ہے۔ دولت، عورت، اولاد۔

نکل کر واپس نہیں آتی۔ تیر کمان سے، بات زبان سے، جان جسم سے۔

ہمیشہ غم میں رہتے ہیں۔ حاسد، کاہل، وہمی۔

محنت سے آپ تین چیزوں سے بچے رہتے ہیں۔ بے لطفی، بدی، دوسروں کے آگے ہات پھیلانا۔

دوسروں پر بھروسہ کرنے والے کم ہی کامیاب ہوتے ہیں۔ زندگی میں کامیابی کی شرط۔ عالم۔ صابر اور محنت کش ہونا۔

تین چیزیں کسی کا انتظار نہیں کرتیں:موت، وقت، گاہک۔

تین چیزیں ہر ایک کی جدا ہوتی ہیں:سیرت، صورت، قسمت۔

تین چیزیں سمجھ کر اٹھانی چاہئیں:قسم، قدم، قلم۔

تین چیزیں خلوص سے کرنی چاہئیں:رحم، کرم، دعا۔

تین چیزیں کبھی چھوٹی نہ سمجھو:فرض، قرض، مرض۔

تین چیزیں انسان کو اصل مقصد سے روکتی ہیں:بدکرداری، غصہ، طمع۔

تین چیزیں انسان کی صحت کو بگاڑتی ہیں:زیادہ کھانا، زیادہ سونا، زیادہ جاگنا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *