حضرت وہب بن منبہ رحمۃ اللّٰہ علیہ فرماتے ہیں، کہ پہاڑ کو ایک ایک چٹان کرکے یا ایک ایک پھتر کرکے ہٹانا شیطان پر آسان ہے عقل مند مومن کو گمراہ کرنے سے، جب شیطان کا اس پر بس نہیں چلتا تو جاہل کی طرف پلٹ جاتا ہے اور اس کو قابو کرکے گناہوں میں مبتلا کر دیتا ہے۔ اور اس کو کوڑوں یا طوق یا منہ کالا کرانے یا ہاتھ کٹانے یا سنگسار ہونے یا پھانسی چڑھنے میں ہلاک کر دیتا ہے ۔ دو انسان نیک اعمال کرنے میں تو برابر ہوتے ہیں مگر ان کے درمیان مشرق و معرب یا اس سے بھی زیادہ فاصلہ ہوتا ہے۔ جب ایک دوسرے سے زیادہ عقل مند ہو۔ سمجھ اور عقل کے ساتھ جتنا عبادت ہوسکتی ہے اللّٰہ کی اس سے بہتر نہیں ہو سکتی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *